Home » News » اسرائیل اور بحرین کے معاہدے کے بعد ایران بھی میدان آگیا، ناقابل یقین اعلان

اسرائیل اور بحرین کے معاہدے کے بعد ایران بھی میدان آگیا، ناقابل یقین اعلان

تہران ( ویب ڈیسک) ایران نے بحرین اور اسرائیل کے درمیان معاہدے کو شرمناک قرار دے دیا۔عرب خبر رساں ادارے کے مطابق ایران نے متحدہ عرب امارات کے بعد بحرین کی جانب سے اسرائیل کے ساتھ معاہدے پر شدید رد عمل کا اظہار کیا۔ایرانی کی وزارت خارجہ نے کہا ہے کہ اسرائیل کے ساتھ معاہدے کے بعد اب بحرین بھی اسرائیل کے جرائم کا شراکت دار ہے۔

وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ بحرین کے حکمران اب صہیونی ریاست کے جرائم کی صورت میں خطے میں سیکیورٹی اور عالم اسلام کو لاحق خطرات کے شراکت دار ہوں گے۔ ایران نے کہا ہےکہ خطے اور فلسطین میں دہشتگردی، خونریزی اور مظالم کا ذمہ داری اسرائیل ہے۔وزارت خارجہ کے بیان میں کہا گیا ہےکہ اسرائیل سے شرمناک ڈیل کے ذریعے بحرین نے فلسطین کاز کو قربان کردیا ہے، بلاشبہ اس کے نتیجے میں مظلوم فلسطینی عوام، مسلمانوں اور آزاد اقوام میں اشتعال اور نفرت بڑھے گی۔ خیال رہے کہ گزشتہ روز امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اعلان کیا تھا کہ ہمارے دو بہترین دوست اسرائیل اور بحرین امن معاہدے کیلئے رضا مند ہو گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بحرین اسرائیل کو تسلیم کرنے والا دوسرا عرب ملک ہے۔ واضح رہے کہ گزشتہ ماہ اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان ایک تاریخی امن معاہدہ ہوا تھا جس کے بعد مشرقی وسطیٰ کے دونوں اہم ملکوں کے درمیان سفارتی تعلقات معمول پر آسکیں گے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان امن معاہدہ کرانے میں ثالث کا کردار ادا کیا۔ بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق معاہدے کے تحت اسرائیل مغربی کنارے میں واقع فلسطین کے ان علاقوں پر دعویٰ سے دستبردار ہو گا جنہیں وہ ضم کرنا چاہتا تھا۔رپورٹس کے مطابق امن معاہدہ اسرائیل، متحدہ عرب امارات اور امریکہ کے مابین طویل گفت وشنید کے بعد ممکن ہوسکا۔

Check Also

جب خانہ کعبہ کو گرانے کی تیاری کی جا ئے گی تو خانہ کعبہ کی چابیاں حضوؐر کے پاس چلی جائیں گی

جب خانہ کعبہ کو گرانے کی تیاری کی جا ئے گی تو خانہ کعبہ کی چابیاں حضوؐر کے پاس چلی جائیں گی ۔۔۔۔ پڑھیےہزاروں سال پہلے پیش گوئیوں پر مبنی ایک انتہائی ایمان افروز تحریر

اللہ حزقی ایل نبی کی زبانی کہتا ہے مجھ سے اپنی قربانیاں دور رکھو! کیونکہ …